ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Nishat-1 حادثے سے بال بال بچ گیا.    Newly posted SSPs in Punjab police visit PSCA, PPIC3.    "  لڑکیاں صرف ماں کی کوکھ یا پھر قبر میں محفوظ ہیں" طالبہ نے خودکشی کر لی.    "میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.    NA-133 ضمنی انتخاب : جمشید اقبال چیمہ کی اپیلوں پر الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ جاری.   

پریس کانفرنس کے دوران کال کس نے کی ،نہیں بتا سکتا : شاہ محمودقریشی

ویب ڈیسک
23 May, 2022

23 مئی ، 2022

ویب ڈیسک
23 May, 2022

23 مئی ، 2022

پریس کانفرنس کے دوران کال کس نے کی ،نہیں بتا سکتا : شاہ محمودقریشی

post-title

ملتان: تحریک انصاف کے رہنما شاہ محمود قریشی نے عمران خان کی پریس کانفرنس کے دوران موصول ہونے والی کال سے متعلق بتانے سے انکار کردیا۔

برطانوی نشریاتی ادارے کو دیے گئے انٹرویو میں شاہ محمود قریشی نے کہا کہ پی ٹی آئی سمجھتی ہے کہ جلد انتخابات ستمبرکے آخریااکتوبر کے آغاز میں منعقد کرائے جاسکتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہااگر حکومت نے تاخیر کی تو ملک کا نقصان ہوگا، الیکشن کمیشن نے بھیکہا ہے کہ اس ٹائم لائن کے اندر جلد انتخابات ممکن ہیں لیکن اس وقت جلد انتخابات کی راہ میں رکاوٹ آصف زرداری ہیں۔

انہوں نے کہا زرداری سمجھتے ہیں کہ جلد انتخابات میں ان کی جماعت کو اندرون سندھ کے علاوہ کہیں سے کچھ حاصل نہیں ہوگا،آصف زرداری چاہتے ہیں (ن) لیگ اقتدار میں رہے اور مشکل فیصلے بھی کرے، وہ چاہتے ہیں کہ پیپلزپارٹی بغیر کسی سیاسی نقصان کے شریک اقتدار بھی رہے، زرداری چاہتے ہیں آنے والے انتخابات میں وہ اپنے لیے رعایتیں بھی حاصل کر سکیں۔

شاہ محمود کا کہناتھاکہ پیپلز پارٹی وفد نے لندن میں نواز شریف سے پنجاب میں اپنے 10 رہنماؤں کے لیے سیٹیں مانگی ہیں، پنجاب میں سیٹیں مانگنا اعتراف ہے کہ اب پیپلزپارٹی پنجاب میں اپنی شکست تسلیم کرچکی ہے، دو سیاسی خاندانوں کے اس ملاپ سے نہ معیشت کا فائدہ ہے اور نہ سیاسی فائدہ۔

بی بی سی کو دیے گئے انٹرویو  میں شاہ محمود سے عمران خان کی پریس کانفرنس کے دوران آنے والی کال سے متعلق بھی سوال کیا گیا اور پوچھا گیا کہ پریس کانفرنس کے دوران موصول ہونے والی کال پیغام تھا یا دھمکی؟ اس پر شاہ محمود نے کہا کہ کل موصول ہونے والی کال کس کی تھی نہیں بتا سکتا، اس معاملے پر خاموشی اختیارکروں گا۔

انہوں نے کہا کہ عمران خان نے کرپٹ عناصر پر ہاتھ ڈالا تو ان سے تعاون نہیں کیا گیا، ہمارا صرف صاف اور شفاف الیکشن کا ایجنڈا ہے۔

شاہ محمود نے دعویٰ کیا کہ وزیر داخلہ کے دھمکی آمیز بیانات سامنے آ رہے ہیں، کتنےلوگوں کو گرفتار کرسکتے ہیں،  قوم نے فیصلہ کرلیا تو جیلیں کم پڑجائیں گی۔
 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM