ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Nishat-1 حادثے سے بال بال بچ گیا.    Newly posted SSPs in Punjab police visit PSCA, PPIC3.    "  لڑکیاں صرف ماں کی کوکھ یا پھر قبر میں محفوظ ہیں" طالبہ نے خودکشی کر لی.    "میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.   

کالعدم تنظیم کا کوئٹہ دھماکے کی ذمہ داری قبول کرنا تشویشناک ہے:رانا ثناء

ویب ڈیسک
01 Dec, 2022

01 دسمبر ، 2022

ویب ڈیسک
01 Dec, 2022

01 دسمبر ، 2022

کالعدم تنظیم کا کوئٹہ دھماکے کی ذمہ داری قبول کرنا تشویشناک ہے:رانا ثناء

post-title

اسلام آباد :  (اے پی این این )  وفاقی وزیر رانا ثناء اللہ نے کہا کہ کالعدم تنظیم کا دہشتگردی میں ملوث ہونا خطے کیلئے خطرہ ہے ۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر رانا ثناء اللہ نے کہا کہ اگر کالعدم تنظیم پاکستان کے اندر دہشتگردی کی کارروائیوں میں ملوث پائی جائے اور حملوں کی ذمہ داری بھی قبول کرے تو یہ خطرناک چیز ہے اور اس حوالے سے پاکستان کی حکومت اقدامات کررہی ہے ۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ بلوچستان میں ہونے والا حملہ قابل مذمت ہے، کالعدم تنظیم پاکستان میں دہشتگردی میں ملوث ہے، مسائل کے حل کیلئے ضروری ہے کہ اس سے پہلے  وفاقی حکومت معاملات اپنے ہاتھ میں لے صوبائی حکومتوں کو چاہیے کہ مسائل کے حل کیلئے موثر اقدامات کریں ۔

ان کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت صوبائی حکومتوں کی مدد کیلئے ہر طرح سے تیارہے، بالخصوص بلوچستان اور کے پی میں ضرورت ہے کہ انتظامیہ ان معاملات کو سنجیدہ لے ۔

انہوں نے کہا کہ سیاسی معاملات چلتے رہتے ہیں مگر ریاست مقدم ہے، وزیر اعلیٰ کے پی کی ذمہ داری ہے جو مدد درکار ہو وہ لیں ،جہاں فورسز کی مدد کی ضرورت ہے ہم صوبوں کی مدد کریں گے ۔

رانا ثناءاللہ نے کہا کہ عمران خان اور انکی جماعت کی ملک میں اتفراتفری پھیلانے کی کوشش ہے، جب حکومت میں تھے تو انکا ایک ہی نصب العین تھا کہ اپوزیشن کو ختم کریں ۔ عمران خان نے کرپشن کا بیانیہ بنایا، اور اس بیانیے پر اپوزیشن کو صفحہ ہستی سے مٹانا چاہتے تھے،جو خود کیا وہ اب سامنے آگیا ، توشہ خانے سے تحائف اور گھڑیاں بیچتے رہے جبکہ فرح گوگی پیسے پکڑ کر صوبے میں تقرریاں و تبادلے کرتی رہیں۔

وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ عمران خان 26 نومبر کو لانگ مارچ میں ناکام ہوئے،چیئرمین پی ٹی آئی میرا نام لے کر پکارتے تھے کہ اسلام آباد آرہا ہوں تیار ہوجائو، پنڈی اور اسلام آباد سے ٹوٹل 5سے6ہزار لوگ جلسے میں پہنچے، عمران خان کو چاہیے تھا شرمندگی کو تسلیم کرتےاور قوم سے معذرت کے بعد پارلیمنٹ میں واپس آتے ۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ عمران خان کو چاہیے تھا اپنی سمت درست کرتے، مگر انہوں نے دو اسمبلیاں تحلیل کرنے کی بات کردی، جلسوں میں ناکام ہوکر اسمبلیوں کو توڑنا اسمبلیوں کی توہین ہے، چھوڑ کوئی چیز نہیں مگر پروپیگنڈا کررہے ہیں، ایک مطالبہ ہے کہ آپ صوبائی اسمبلیاں توڑنے سے پہلے قومی اسمبلی سے استعفے تو دے دیں ۔

انکا کہنا تھا کہ کوئی ایسا معاملہ نہیں جس میں ہم الیکشن سے خوفزدہ ہوں ، الیکشن کیلئے پوری طرح تیار ہیں ، پنجاب میں بھرپور الیکشن کی تشہیر کریں گے، اسمبلیاں توڑنا غیرسیاسی اور غیر جمہوری عمل ہے، یہ ان کی بھول ہے کہ یہ جیت کر آجائیں گے۔

رانا ثناء نے مزید کہا کہ سیاسی حوالے سے جو عدم استحکام پیدا کرنے کوشش ہورہی ہے اس کو روکنے کی کوشش کی جائے گی ، کسی کی بلیک میلنگ کو کسی طور قبول نہیں کیا جائے گا۔


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM