ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Nishat-1 حادثے سے بال بال بچ گیا.    Newly posted SSPs in Punjab police visit PSCA, PPIC3.    "  لڑکیاں صرف ماں کی کوکھ یا پھر قبر میں محفوظ ہیں" طالبہ نے خودکشی کر لی.    "میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.   

افسر شاہی کی بڑھتی ہوئی مداخلت ، اساتذہ بھی بول پڑے

ویب ڈیسک
20 Jan, 2023

20 جنوری ، 2023

ویب ڈیسک
20 Jan, 2023

20 جنوری ، 2023

افسر شاہی کی بڑھتی ہوئی مداخلت ، اساتذہ بھی بول پڑے

post-title

فیڈریشن آف آل پاکستان یونیورسٹیز پنجاب چیپٹر کے صدر انجینئر پروفیسر ڈاکٹر محمد اظہر نعیم نے جامعات میں نوکر شاہی کی بڑھتی ہوئی مداخلت پر تشویش کا اظہار کیا ہے - انہوں نے اپنے بیان میں کہا کہ خاتم النبیین یونیورسٹی میں ایک حاضر سروس بیوروکریٹ کو وائس چانسلر کا چارج دینا اس بات کی غمازی کرتا ہے کہ پنجاب حکومت اعلی تعلیمی اداروں کو تباہ کرنے پر تلی ہوئی ہے۔ جو نوکر شاہی پچھتر سالوں سے اپنے اداروں کو صحیح نہ کر سکی، اور ملک کے مالی اور انتظامی معاملات اس نہج پہ پہنچا چکے ھیں کہ اب ملکی اکانومی سسکیاں لے رہی ھے۔ وہ افسر شاہی اب جامعات کا بھی بیڑا غرق کرنے پہ تلی ھوئی ھے۔ انھوں نے مزید کہا کہ نوکر شاہی کو تعلیمی اداروں میں مداخلت سے باز رکھا جائے اور اساتذہ کو حق اور اختیار ھے کہ وہ جامعات کا انتظام چلائیں- مزید یہ کہ فی الفور نوکر شاہی میں سے متعین شدہ گریڈ 20 کے افسر کو وائس چانسلر شپ سے ہٹایا جائے ورنہ اساتذہ کرام قانونی اور احتجاج کا راستہ اپنائیں گے- انہوں نے مذید کہا کہ وائس چانسلر خاتم النبیین یونیورسٹی ایک ایسے محقق جو ڈاکٹریٹ ڈگری ہولڈر ھوں اور جامعات میں تعلیم و تحقیقی کا ہائیر ایجوکیشن کمیشن کے وضع کردہ قوانین کے مطابق تجربہ رکھتے ھوں، کو لگایا جائے۔ انہوں نے مذید کہا کہ ایسی جامعہ کا جہاں پہ خاتم النبیین (ﷺ) کی سیرت اور انکی زندگی بارے تعلیم و تحقیق ھونا ھے، وہاں ایک ایسے افسر کی تعیناتی جو کہ مطلوبہ معیار پہ پورا نہ اترتے ھیں، ایک مذاق سے کم نہ ھے۔


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM