ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Nishat-1 حادثے سے بال بال بچ گیا.    Newly posted SSPs in Punjab police visit PSCA, PPIC3.    "  لڑکیاں صرف ماں کی کوکھ یا پھر قبر میں محفوظ ہیں" طالبہ نے خودکشی کر لی.    "میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.    NA-133 ضمنی انتخاب : جمشید اقبال چیمہ کی اپیلوں پر الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ جاری.   

انڈس واٹر کمشنر نے بھارتی ہم منصب کو خط لکھ دیا

ویب ڈیسک
01 Aug, 2022

01 اگست ، 2022

ویب ڈیسک
01 Aug, 2022

01 اگست ، 2022

انڈس واٹر کمشنر نے بھارتی ہم منصب کو خط لکھ دیا

post-title

بھارت کی جانب سے دریائے راوی میں 2 لاکھ کیوسک پانی چھوڑے جانے کی خبروں پر انڈس واٹر کمشنر سید مہر علی شاہ نے بھارتی ہم منصب کو خط لکھاہے ، جس میں  پانی چھوڑے جانے سے متعلق بروقت آگاہ کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

رپورٹس کے مطابق انڈس واٹر کمشنر سید مہر علی شاہ نے اپنے بھارتی ہم منصب کو خط لکھا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ بھارتی میڈیا میں گورداس پور انتظامیہ کی جانب سے 2 لاکھ کیوسک پانی دریائے راوی میں چھوڑے جانے کا پیغام نشر کیا ہے۔ اتنی بڑی مقدارمیں پانی چھوڑے جانے پر ہمیں اپنی طرف بھی حفاظتی اقدامات کرنے ہوں گے۔

خط میں کہا گیا ہے کہ دریائے راوی کے اطراف تعمیرات، انسانی جانوں اور مویشیوں کی حفاظت کے انتظامات کرنا ہوں گے، اس لیے دریائے راوی میں کتنا پانی پاکستان پہنچے گا اس حوالے سے بروقت بتایا جائے ۔

واضح رہے کہ بھارت کی جانب سے پانی چھوڑے جانے کے بعد پنجاب کے مختلف علاقوں میں سیکڑوں دیہات زیر آب آ گئے ہیں اور ہزاروں ایکڑ پر کاشت کی ہوئی چاول سمیت دیگر فصلیں مکمل تباہ ہو گئی ہیں۔

بھارت کی جانب سے چھوڑے گئے پانی سے دریائے راوی، دریائے اوج، نالہ بئیں، نالہ ڈیک اور نالہ بسنتر بپھر گئے، بہاولپور اور جھنگ کےقریب دریائے چناب میں نچلےدرجے کا سیلاب آ گیا۔

سیلابی صورتحال کے نتیجے میں سیکڑوں دیہات اور ہزاروں ایکڑ پر کھڑی فصلیں سیلابی پانی کی زد میں آگئیں۔
 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM