ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Nishat-1 حادثے سے بال بال بچ گیا.    Newly posted SSPs in Punjab police visit PSCA, PPIC3.    "  لڑکیاں صرف ماں کی کوکھ یا پھر قبر میں محفوظ ہیں" طالبہ نے خودکشی کر لی.    "میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.    NA-133 ضمنی انتخاب : جمشید اقبال چیمہ کی اپیلوں پر الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ جاری.   

اگلے ماہ سے روپے پر دباؤ کم ہو جائگا، ہم نے ملک کو دیوالیہ ہونے سے بچا لیا

ویب ڈیسک
01 Aug, 2022

01 اگست ، 2022

ویب ڈیسک
01 Aug, 2022

01 اگست ، 2022

اگلے ماہ سے روپے پر دباؤ کم ہو جائگا، ہم نے ملک کو دیوالیہ ہونے سے بچا لیا

post-title

وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے کہ اگلے ماہ سے روپے پر ڈالر کا دباؤ کم ہونا شروع ہوجائے گا، ہماری کوشش ہے کہ کرنٹ اکاونٹ خسارےکو ایک سال میں سرپلس کریں۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیرخزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ ایف بی آر ڈیٹا کے مطابق ملک میں اس ماہ درآمدات 5 بلین ڈالر کی تھیں، یعنی 2.7 بلین درآمدات میں کمی ہوئی جو خوش آئند ہے، اس سے روپیہ مستحکم ہوگا اور ادائیگیاں بھی کم ہوں گی۔

مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ اس ملک کی خاطر ہماری سیاست بھی قربان ہے، بطور وزیرخزانہ میری ترجیح ملک کو دیوالیہ سے بچانا تھی، ہم نے ملک کو دیوالیہ ہونے سے بچا لیا ہے، اب پاکستان کی معیشت کو حوشحالی کے راستے پر گامزن کرنا ہے، مشکلات آئیں گی تو ہم نے مل کر مقابلہ کرنا ہے۔ ہماری کوشش ہے کرنٹ اکاونٹ خسارے کو ایک سال میں سرپلس کریں۔

وزیرخزانہ کا کہنا تھا کہ اس ماہ ہمیں اسٹیٹ بینک کو 800 ملین ڈالر زیادہ دینے پڑے جو خسارہ ہوا، جون میں 3.8 بلین کی پیٹرولیم مصنوعات خریدی تھیں، اور جولائی میں ادائیگی کرنی تھی اس لیے رواں ماہ روپے پر زیادہ دباؤ تھا، جولائی میں درآمدات بہت کم ہے، اگست سے یہ دباؤ ختم ہوجائے گا، اور اگلے مہینے سے روپے پر پریشر کم ہونا شروع ہوجائےگا، کوشش ہے ملک سے باہر ڈالر کم جائیں اور ملک میں ڈالر زیادہ آئیں، اگلے ماہ سے برآمدات کو بڑھانے کی کوشش کریں گے۔

150 یونٹ سے کم بجلی استعمال کرنے والے دکانداروں کو ٹیکس میں چھوٹ دینے کا اعلان کرتے ہوئے وزیرخزانہ نے کہا کہ موجودہ بجلی بلوں میں اضافہ اپریل فیول ایڈجسٹمنٹ میں ہوا ہے، وہ میرا قصور نہیں ہے، ہم سب کو ٹیکس تو دینا پڑے گا، چھوٹی دکان والوں سے سال کا صرف 36 ہزار کا ٹیکس مانگ رہا ہوں۔ اشیائے خورونوش کی قیمتوں پرہم نےسبسڈی دی، آئی ایم ایف کی ایک شرط باقی ہے وہ کل تک پوری ہوجائے گی۔

وزیرخزانہ نے کہا کہ عمران خان ملک میں معاشی تباہی کے ذمہ دار ہیں، 2018 میں پاکستان کا قرض 24 ہزارارب تھا اور انہوں نے پونے 4 سال میں ملک کے مجموعی قرض کا 80 فیصد قرض بڑھایا، ان کے وزیرخزانہ شوکت ترین بجٹ خسارہ ساڑھے 9 فیصد پر چھوڑ کرگئے، کرنٹ اکاؤنٹ خسارے کی بڑی وجہ عمران خان کی پالیسیاں ہیں، آئی ایم ایف سے وعدہ توڑا تو کرنٹ اکاؤنٹ خسارہ بڑھا۔

مفتاح اسماعیل کا کہنا تھا کہ عمران خان نے بجلی کے شعبے میں سرکلرڈیٹ 2500 ارب کا کردیا، گیس میں سرکلر ڈیٹ نہیں ہوتا تھا وہ بھی یہ چھوڑ کرگئے، 20 فیصد گیس چوری ہوتی تھی یا ہوا میں اڑادی گئی کسی کو پتا ہی نہیں چلا، انہوں نے جو حال پاکستان کا کیا وہی پی ایس او کے ساتھ بھی کرگئے، آئی ایم ایف معاہدے کے خلاف نقصان پر پٹرول اورڈیزل پر سسبڈی دی۔

عمران خان نے کوئی اصلاحات نہیں کیں صرف میڈیا پر آکر الزام تراشی کرتے رہے، انہوں نے نوازشریف کو ہٹانے کے لیے جھوٹے کیسز کیے، اور ان کو سیاست سے ہٹانے کی بہت کوشش کی لیکن آج تک یہ نہیں بتایا گیا کہ نواز شریف نے کرپشن کہاں کی، نواز شریف نے جب لندن میں اپارٹمنٹ لیے تھے، اس سال ان کی کمپنی نے 4 سو کروڑ کمائے تھے۔

مفتاح اسماعیل نے کہا کہ عمران خان سچے ہیں تو فنانشل ٹائمز کی رپورٹ پر ان کے خلاف کیس کریں، بی آرٹی کیس میں عمران عدالتی تحقیقات سے کیوں ڈرتے ہی، یو ٹرن لے کر اپنےلوگوں کو ایمنسٹی دی، پھر کہتے ہیں تھوڑی سے منی لانڈرنگ کی تو کیا ہوا، تھوڑی سی ایمنسٹی دے دی کہا کیا فرق پڑتا ہے، سری لنکا جیسی آپ نے حرکت کی کم قیمت پر پٹرول بیچی، کہتے ہیں تھوڑا سا معاہدہ توڑ دیا تو کیا فرق پڑتا ہے۔ ہم الیکشن کمیشن سے مطالبہ کرتے ہیں کہ فارن فنڈنگ کا کیس کا فیصلہ جلد سنائے۔

وفاقی وزیر کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان نے آئی ایم ایف سے معاہدہ توڑا، آپ نے 21 ارب ڈالر دنیا کے دینے ہیں، 50 لاکھ گھروں میں سے کتنے گھر بنائے 5 ہزار گھر بھی بنائے ہیں تو مجھے دکھادیں، ایک کروڑ نوکریاں دینی تھیں 10لاکھ کو بھی دی تو سامنے لائیں، پھر بھی ہمیں چور اور غدار کہتے ہیں، شرم نہیں آتی جھوٹ بولتے ہوئے، آج پاکستان کو بچایا ہے تو نواز شریف حکومت نے بچایا ہے۔
 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM