ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Nishat-1 حادثے سے بال بال بچ گیا.    Newly posted SSPs in Punjab police visit PSCA, PPIC3.    "  لڑکیاں صرف ماں کی کوکھ یا پھر قبر میں محفوظ ہیں" طالبہ نے خودکشی کر لی.    "میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.   

بچوں کے سامنے ماں کا گلا کاٹ کر قتل کرنیوالے باپ کو سزائے موت کا حکم

ویب ڈیسک
21 Nov, 2022

21 نومبر ، 2022

ویب ڈیسک
21 Nov, 2022

21 نومبر ، 2022

بچوں کے سامنے ماں کا گلا کاٹ کر قتل کرنیوالے باپ کو سزائے موت کا حکم

post-title

اسلام آباد کی مقامی عدالت نے بچوں کے سامنے ماں کا گلا کاٹ کرقتل کرنے والے باپ کو سزائے موت سنادی۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد کے جج عطا ربانی نے 15 صفحات پر مشتمل فیصلہ جاری کردیا جس میں کہا گیا ہے کہ مجرم ناصرحسین نے 19 نومبر 2020 کو بیوی کو2 بچوں کے سامنے گلا کاٹ کرقتل کیا، 18 سال قبل دونوں کی شادی ہوئی اور وہ سہالہ میں کرائے کے گھر میں رہ رہے تھے۔

عدالتی فیصلے کے مطابق مقتولہ کی اولاد میں 3 بیٹے 2 بیٹیاں ہیں، مجرم لوڈرچلاتا جب کہ مقتولہ گھروں میں کام کرتی تھی، مجرم نشے کا عادی اور  بیوی پرتشدد کرتا تھا، مقتولہ نے رشتہ داروں کو کئی باربتایا۔

فیصلے میں کہا گیا ہےکہ بیٹوں نے عدالت کو بیان میں بتایا کہ والد نے ان کے سامنے والدہ کو قتل کیا، مجرم کے وکیل نے دفاع میں عدالت کو بتایا اس کےخلاف کوئی ثبوت نہیں، مجرم کے وکیل کے مطابق جو ریکوری کی گئی وہ فیک ہے جب کہ پراسیکیوٹرنے عدالت کو بتایا کہ ملزم کا جرم ثابت کرنے کے کافی شواہد موجود ہیں۔

عدالتی فیصلے کے بعد  بچوں کی گواہی نے باپ کو سزائے موت دلوانے میں اہم کردار ادا کیا۔


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM