ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.    NA-133 ضمنی انتخاب : جمشید اقبال چیمہ کی اپیلوں پر الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ جاری.    UAE گولڈن جوبلی: گلوبل ولیج تصویری مقابلہ درہم 50,000 تک جیتنے کا موقع.    IMFکے ساتھ معاملات طے پا گئے ، معاہدہ اسی ہفتے ہو گا، شوکت ترین.    UET لاہور انڈرگریجویٹ داخلہ فارم جمع کرانے کی آخری تاریخ.    Major progress in Lahore Police Anti-Drug Campaign.    "میرا ڈونا بلیسڈ ڈریم "کا پہلا ٹریلر جاری.    "پاکستان ممکنہ بھارتی جارحیت کا دفاع کرنے کے لیے تیار ہے".    Paperless driving license system is going to be introduced in Punjab.    Foolproof Security on the eve of Urs of Data Ali Hajveri (RA) and Chehlum of Hazrat Imam Hussain (AS).   

اوکاڑہ یونیورسٹی میں دوران ملازمت ہراسگی اور حق وراثت پہ سیمینار کا انعقاد

ویب ڈیسک
22 Oct, 2021

22 اکتوبر ، 2021

ویب ڈیسک
22 Oct, 2021

22 اکتوبر ، 2021

اوکاڑہ یونیورسٹی میں دوران ملازمت ہراسگی اور حق وراثت پہ سیمینار کا انعقاد

post-title

اوکاڑہ یونیورسٹی میں دوران ملازمت ہراسگی اور حق وراثت پہ سیمینار کا انعقاد
صوبائی محتسب نبیلہ خان کا خصوصی خطاب، تحفظ خواتین کے قوانین پہ لیکچر
اوکاڑہ یونیورسٹی میں 'پاکستانی معاشرے کے قانونی اور ثقافتی تناظر میں خواتین کا مقام' کے موضوع پہ ایک سیمینار منعقد ہوا جس میں صوبائی محتسب، نبیلہ خان، نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی اور خواتین کی دوران ملازمت ہراسگی اور وراثت کے حقوق پہ ایک تفصیلی لیکچر دیا۔ 

یونیورسٹی کے وائس چانسلر، پروفیسر ڈاکٹر محمد زکریا ذاکر، نے سیمینار کی صدارت کی اور اپنے خطاب میں خواتین کے حقوق کی پامالی  اور صنفی تضاد کی وجوہات اور اس کے بھیانک نتائج پہ بحث کی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ایک مساوی اور مثالی معاشرے کے قیام کیلیے خواتین کی ہراسگی کے مسائل کو حل کرنا بہت ضروری ہے، لیکن یہ مسائل محض قوانین بنانے سے حل نہیں ہو سکتے، اس کیلیے لوگوں کے رویوں میں تبدیلی لانا ہو گی۔ 
انہوں نے بتایا کہ ہمارے ملک  میں موجودبیشتر مسائل جیسا کہ معاشی بدحالی، بین الاقوامی سطع  پہ ہمارا منفی امیج اور زجہ بچہ کی اموات وغیرہ صرف خواتین کی مضبوطی اور ان کی معاشرتی دھارے میں شمولیت سے ہی حل ہو سکتے ہیں۔ 
نبیلہ خان نے حقوق نسواں کے تحفظ کے حوالے سے صوبائی محتسب کے اقدامات پہ بریفنگ دی۔ انہوں نے معاشرے سے خواتین کی جنسی ہراسگی اور ان  کی حق وراثت سے محرومی  سے مسائل کے خاتمے کیلیے قوانین کے مکمل آگہی اور نفاذ کی اہمیت پہ زور دیا۔ 
دوران ملازمت ہراسگی کے قانون کے سیکشن 2 ایچ اور وومن پراپرٹی رائٹس ایکٹ 2021  کے حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے محتسب کے دفتر میں شکایات درج کروانے کے طریقہ کار اور ان شکایات کے ازالے کیلیے محکمانہ کاروائی  کے عمل کی وضاحت کی۔ 
سیمینار سے شعبہ علوم اسلامیہ سے ڈاکٹر زید لکھوی اور شعبہ کیمیا سے ڈاکٹر غلام مصطفی نیبھی خطاب کیا اور خواتین کے حقوق کے مختلف معاشرتی اور مذہبی پہلووں پہ روشنی ڈالی۔ 
 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM