ارضِ پاک نیوز نیٹ ورک

Arz-e-Pakistan News Network

Language:

Search

Newly posted SSPs in Punjab police visit PSCA, PPIC3.    "  لڑکیاں صرف ماں کی کوکھ یا پھر قبر میں محفوظ ہیں" طالبہ نے خودکشی کر لی.    "میں ناگن، تو سپیرا " پوسٹ سوشل میڈیا پر وائرل.    "منی ہائسٹ "(Money Heist )کاآخری حصہ پاکستان سمیت دنیا بھر میں آج ریلیز کیا جائے گا.    NA-133 کا ضمنی انتخاب.    NA-133 ضمنی انتخاب.    NCA میں "دی سندھو پراجیکٹ اینگما آف روٹس " کے عنوان سے فن پاروں کی نمائش.    KIPS-CSS کی جانب سے CSSمیں کامیاب امیدواروں کے اعزاز میں عشائیہ.    NCA میں ٹریڈیشنل آرٹ کورسز ورکشاپ کی اختتامی تقریب.    NA-75 الیکشن کمیشن کی رپورٹ پر ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا ردعمل.    NA-133 ضمنی انتخاب : جمشید اقبال چیمہ کی اپیلوں پر الیکشن ٹربیونل کا فیصلہ جاری.    UAE گولڈن جوبلی: گلوبل ولیج تصویری مقابلہ درہم 50,000 تک جیتنے کا موقع.   

home-add

انڈیا : پوتا پوتی پیدا نہ کرنے پر بیٹے پر مقدمہ درج

ویب ڈیسک
13 May, 2022

13 مئی ، 2022

ویب ڈیسک
13 May, 2022

13 مئی ، 2022

انڈیا : پوتا پوتی پیدا نہ کرنے پر بیٹے پر مقدمہ درج

post-title

شمالی انڈیا کی ریاست اترآکھنڈ میں ایک جوڑے نے اپنے بیٹے اور بہو کے خلاف شادی کے چھ سال بعد پوتا پوتی نہ دینے پر ان کے خلاف مقدمہ کر دیا ہے۔

61 سالہ سنجیو اور 57 سالہ سادھنا پرساد کا  نے کہا کہ انھوں نے اپنی جمع پونجی بیٹے کی پرورش، اسے پائلٹ کی تربیت دلوانے اور اس کی شادی کی شاندار تقریبات پر خرچ کر دی تھی۔

انھوں نے دعویٰ کیا ہے اگر ایک سال کے اندر اندر کوئی پوتا پوتی پیدا نہیں ہوتا تو تقریباً 650000 ڈالر ( پاؤنڈ 525000) کی رقم انھیں ازالے کے طور پر لوٹائی جائے۔

ان کے بیٹے اور بہو نے اس حوالے سے کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔ یہ انتہائی غیر معمولی مقدمہ ’ذہنی ہراسانی‘ کی بنیاد پر دائر کیا گیا ہے۔

پرساد کا کہنا تھا کہ انھوں نے اپنی تمام جمع پونجی اپنے بیٹے پر خرچ کر دی۔ ’2006 میں 65000 ڈالر خرچ کرکے اسے پائلٹ کی تربیت کے لیے امریکہ بھیجا۔‘

ٹائمز آف انڈیا کی رپورٹ کے مطابق پرساد کا بیٹا 2007 میں انڈیا واپس آیا لیکن اپنی ملازمت سے ہاتھ دھو بیٹھا۔ اس وقت اس کے خاندان نے دو سال سے زیادہ عرصے تک مالی طور پر اس کی مدد کی۔

35 سالہ شرے ساگر کو آخر کار پائلٹ کی نوکری مل گئی۔ ان کے والدین کا کہنا ہے کہ انھوں نے 2016 میں اس کی شوبھانگی سنہا (جن کی عمر اب 31 سال ہے) سے اس امید پر شادی کروائی کہ ریٹائرمنٹ کے دوران ان کے پاس ایک پوتا پوتی ہو گا جس کے ساتھ وہ وقت گزار سکیں گے۔
 
والدین کا کہنا ہے کہ انھوں نے فائیو سٹار ہوٹل میں شادی کے استقبالیے سے لے کر 80000 ڈالر کی لگژری کار اور بیرون ملک ہنی مون کے لیے بھی پیسے دیے۔

پرساد کا کہنا ہے کہ ’میرے بیٹے کی شادی کو چھ سال ہو چکے ہیں لیکن وہ ابھی تک بچے پیدا کرنے کا کوئی ارادہ نہیں رکھتے۔ کم از کم اگر ہمارے پاس وقت گزارنے کے لیے کوئی پوتا پوتی ہو تو ہماری تکلیف قابلِ برداشت ہو گی۔‘

جوڑے کے وکیل اے کے سریواستو نے دی نیشنل کو بتایا کہ جوڑے نے ’ذہنی اذیت کے باعث‘ خرچ کی گئی رقم کے ازالے کا مطالبہ کیا ہے۔

’دادا دادی بننا ہر والدین کا خواب ہوتا ہے اور وہ برسوں سے دادا دادی بننے کا انتظار کر رہے ہیں۔‘

اس جوڑے کی جانب سے یہ درخواست ہریدوار میں دائر کی گئی ہے اور توقع ہے کہ عدالت 17 مئی کو اس کیس کی سماعت کرے گی۔
ان کے بیٹے اور بہو نے اس حوالے سے کوئی تبصرہ نہیں کیا ہے۔

 


APNN نیوز، APNN گروپ یا اس کی ادارتی پالیسی کا اس تحریر کے مندرجات سے متفق ہونا ضروری نہیں ہے۔

APNN News, the APNN Group or its editorial policy does not necessarily agree with the contents of this article.


عوامی بحث (0) تبصرے دیکھنے کے لئے کلک کریں Public discussion (0) Click to view comments
28 / 5 / 2021
Monday
1 : 23 : 31 PM